Home / Archives / سی پیک سمیت دیگر میگا پروجیکٹس کیخلاف نہیں تحفظات دور کئے جائیں ،بی این پی

سی پیک سمیت دیگر میگا پروجیکٹس کیخلاف نہیں تحفظات دور کئے جائیں ،بی این پی

اسلام آباد228کوئٹہ: بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات رکن قومی اسمبلی آغا حسن بلوچ ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ سی پیک سمیت دیگر میگا پروجیکٹس کے مخالف نہیں مگر بلوچ مفادات سے ہٹ کر بننے والے منصوبوں پر اپنے خدشات اور تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے ہر فورم پر آواز بلند کرنے کا حق رکھتے ہیں ۔

سابق حکمرانوں نے سی پیک سمیت ترقیاتی منصوبوں میں گوادر اور بلوچستان کو مکمل نظر انداز کیا جس سے احساس محرومی میں اضافہ ہونا فطری عمل تھا دور جدید میں بھی عوام کے غیور عوام پانی سے محروم ہیں گوادر ہے تو سی پیک ہے میگا منصوبوں میں سے تمام فوائد دیگر صوبوں کو ملے بلوچ اور بلوچستانی عوام اس سے محروم رہے ۔

انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں اے پی سی منعقد کرانے کا پارٹی مقصد بھی یہی تھا کہ ملک کے تمام سیاسی جماعتوں و ہر طبقہ فکر تک یہ بات پہنچائی جائے کہ میگاپروجیکٹس میں ہمارے ساتھ کتنی ناانصافیاں برتی جا رہی ہیں پانی‘صحت‘تعلیم‘انسانی ضروریات زندگی سمیت ہر شعبے میں مکمل طور پر بلوچستان کو نظر انداز کیا گیا ۔

سی پیک میں بلوچستانیوں کیلئے کچھ نہیں رکھا گیا انہوں نے کہا کہ اب موجودہ حکمرانوں پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ بلوچستان کی جغرافیائی اہمیت کو تسلیم کریں گوادر جو گیٹ وے ہے ۔

وہاں کے غیور عوام کو تعلیم‘صحت‘پانی‘روزگار کی فراہمی میں ترجیح ہے سابق حکمرانوں نے بھی ماضی کی ناانصافیوں کا تسلسل برقرار رکھا اب ایسے عمل کو برداشت نہیں کیا جائیگا ۔

انہوں نے کہا کہ فوری طور پر قانون سازی کرنے کی جائے تاکہ گوادر کی تاریخ‘تہذیب‘دن ملیا میٹ نہ ہو اور گوادر سے دیگر صوبوں کے لوگوں کو شناختی کارڈز کا اجراء اور انتخابی فہرستوں میں اندراج کی اجازت نہ ہو ہم گوادر کو کراچی بنتا نہیں دیکھنا چاہتے جو بلوچوں کیلئے اب اجنبی شہر بن چکا ہے ۔

انہوں نے کہا کہ باشعور قوم ہونے کے ناطے ترقی و خوشحالی چاہتے ہیں مگر اپنے تحفظات و خدشات پر آواز بلند کرتے ہوئے حقوق کیلئے جدوجہد بھی ہماری قومی ذمہ داری ہے جسے ہم احسن طریقے سے نبھا رہے ہیں ماہی گیروں کیلئے نئے جے ٹیز بنانے کیلئے بھی اقدامات کئے جائیں جو ہزاروں سالوں سے ساحل بلوچستان پر ماہی گیری سے وابستہ ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکمرانوں کے ساتھ جو معاہدے کئے گئے ہیں اس میں بھی سی پیک‘گوادر کے جملہ مسائل بھی شامل ہیں ہماری سیاست کا محور و مقصد عوام کی حقیقی ترقی خوشحالی پسماندگی بدحالی کا خاتمہ ہے پارٹی قائد سردار اختر جان مینگل کی قیادت وقت و حالات کی ضرورت ہے ماضی میں اقتدار پر براجمان حکمرانوں نے ذاتی مفادات کی تکمیل چاہی اور عوام کو بے یار و مددگار چھوڑا ۔

Source: dailyazadiquetta.com

Share on :
Share

About Administrator

Check Also

At least 70 militants, including commander, surrender in Balochistan

QUETTA: At least 70 militants and a commander of a banned organisation surrendered to the government …

Leave a Reply

'
Share
Share
Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com