Home / Archives / بلوچ نوجوان تعلیم کو ہی ہتھیار بنائیں کوئی پسماندہ نہیں رکھ سکتا ،بی این پی

بلوچ نوجوان تعلیم کو ہی ہتھیار بنائیں کوئی پسماندہ نہیں رکھ سکتا ،بی این پی

کوئٹہ: بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات رکن قومی اسمبلی آغا حسن بلوچ ایڈووکیٹ اور پارٹی کے رہنماء الف الدین کرد ،حاصل خان نے ڈی ایس ریلوے واصف علی مغل سے ملاقات کی اور سریاب میں کلی شاہنواز مڈل سکول کا دورہ کیا ۔

اس موقع پر آغا حسن بلوچ نے ڈی ایس ریلوے سے کہا ہے کہ سریاب اسٹیشن پر پنجاب اور سندھ سے آنیوالے گاڑیوں کے لئے پانچ منٹ اسٹاپ کر وائیں تاکہ جو سریاب کی7لاکھ سے زیادہ آبادہ اس سے مستفید ہو سکیں۔

انہوں نے کہا ہے کہ بولان ایکسپریس، جعفرایکسپریس ، نواب اکبر بگٹی ایکسپریس اور پنجاب کے دیگر گاڑیاں جو کوئٹہ کے ریلوے اسٹیشن کے آتے ہیں اس سے قبل جو سریاب مل کے ساتھ جو اسٹیشن ہے اس پر ماضی میں استقبالیہ پانچ رکھتی تھی اور لوگ ان سے اترتے تھے ۔

عوام کیلئے بہت بڑی سہولیت اس سہولت کو عوام کے لئے مہیا کیا جائے انہوں نے کہا ہے کہ بحیثیت ائندے رکن قومی اسمبلی میری کوشش ہے کہ اعلٰی حکام سے بھی اس متعلق بات کرونگا اور جو طریقہ کار ہے اس سے پورا کر تے ہوئے فوری طور پر یہ سہولت عوام کو مہیا کی جائے ڈی ایس ریلوے نے یقین دہانی کروائی کہ میری بھی یہ کوشش ہوگی کہ عوام کو یہ سہولت میسر ہوسکیں۔

دریں اثنا پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات آغا حسن بلوچ ، الف الدین کرد، رضا جان شا ہی زئی اور شوکت بلوچ ، میر حاصل نے گور نٹ مڈل سکول کلی شاہنواز سریاب کا بھی دورہ کیا اور اساتذہ کرام سے ملاقات کی اور کلاسوں کا جائزہ لیا ۔

اس موقع پر انہوں نے کہا کہ کوئٹہ کے سب سے بڑی تاریخی آبادی سریاب کو ماضی کے حکمرانوں نے نظرانداز کیا جس کی وجہ سے یہاں کے بنیادی سہولیات پانی، بجلی ، گیس اور دیگر بنیادی سہولیات نہ ہونے کے برابر ہے ۔

بلوچستان نیشنل پارٹی یہاں کے نوجوانوں کو بالخصوص بلوچ نوجوانوں کو علم وتعلیم کے ہتھیار سے لیس کروانا چا ہتی ہے اور جب ان کا ہتھیار ان کیساتھ ہو گا تو اکیسویں صدی میں کوئی بھی پسماندہ نہیں رہے گا ۔

انہوں نے کہا ہے کہ سریاب کے سکولوں کے حالت زار دیکھ کر انتہائی افسوس ہو تا ہے کہ اس سے قبل صوبائی حکومت جو نام نہاد قوم پرست تھے انہوں نے اربوں روپے کا کرپشن کیا لیکن آج ہ رے نونہار بچے اور نوجوانان سکول میں ڈیکس،ٹاٹ اور پانی جیسے بنیادی سہولت سے بھی محروم ہے ۔

اسی طرح صحت ،بیسک ہیلتھ یونٹ نہ ہونے کے برابر ہے اگر چند علاقوں میں بنیادی ہیلتھ یونٹ موجود ہے تو وہاں پر کوئی بھی فعال اور متحرک نہیں انہوں نے کہا ہے کہ ہ ری پارٹی کے قومی اور صوبائی اسمبلی ممبران کو عوام نے جو مینڈیٹ دیا ہے ۔

ہماری کوشش ہوگی کہ سریاب، کوئٹہ اور بلوچستان بھر میں نوجوانوں کو علم کی جانب راغب کریں اور جو ان علاقوں میں منشیات کی لعنت کو عام کر رکھی ہے پولیس کی ذمہ داری ہے کہ وہ منشیات جیسے لعنت کے خلاف اپنا مثبت اور کلیدی کردار ادا کریں جو ہمارے معاشرے میں نوجوانوں کے لئے ناسور بن چکا ہے۔

Source: dailyazadiquetta.com

Share on :
Share

About Administrator

Check Also

ماؤرائے عدالت گرفتاریاں انسانی حقوق کی خلاف ورزی ہیں ، بی این پی

کوئٹہ: بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی بیان میں کہا گیا ہے کہ پارٹی کے مرکزی …

Leave a Reply

'
Share
Share
Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com