Home / Archives / نوابزادہ امان اللہ زرکزئی کے قتل کیخلاف مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے و ریلیاں

نوابزادہ امان اللہ زرکزئی کے قتل کیخلاف مختلف شہروں میں احتجاجی مظاہرے و ریلیاں

اندرون بلوچستان: بلوچستان نیشنل پارٹی کے مرکزی رہنماء نواب میر امان اللہ زہری زہری اور انکے ساتھیوں کے قتل کیخلاف بلوچستان کے اضلاع نوشکی، خاران، ماشکیل اور چاغی میں احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں اور مظاہرہ کیا گیا مظاہروں کے شرکاء سے خطاب میں پارٹی رہنما?ں نے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے واقعہ میں ملوث افراد کی فوری گرفتار کا مطالبہ کیا۔

بلوچستان کے ضلع نوشکی میں پارٹی سیکرٹریٹ سے احتجاجی ریلی نکالی گئی جو مختلف شاہراہوں سے ہوتے ہوئے میر گل خان نصیر چوک پر پہنچی جہاں شرکاء سے ضلعی صدر میر عطاء اللہ مینگل، مرکزی رہنماء میر خورشید جمالدینی،بی ایس او کے مرکزی کمیٹی کے ممبر عتیق بلوچ، ثناء اللہ جمالدینی، شبیر مینگل،نسیم بلوچ،نذیر بلوچ ودیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہدا کا خون رائیگا نہیں جائیگا اس موقع پر مقررین نے قاتلوں کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا۔

پارٹی کے مرکزی کال پر خاران میں واقع کیخلاف پارٹی رہنماء جمعہ خان کبدانی کی رہائش گاہ سے احتجاجی ریلی نکالی گئی جو مختلف شاہراوں سے ہوتے پریس کلب پہنچی جہاں ریلی کے شرکاء سے خطاب میں ضلعی آرگنائزراسماعیل پیرکزئی،غلام مصطفی ساسولی، جمعہ کبدانی، حاجی غلام حسین بلوچ،ندیم بلوچ،اصغرملنگزئی، افتخار نوشیروانی، شبیراحمد بادینی، نصرت اللہ مینگل،بی ایس او کے امیر ساقی نے واقع کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا۔کہ نواب امان اللہ خان زہری نے آباؤ اجداد کے نقش قدم پر چل کر تاریخ کے اوراق میں اپنا نام روشن کردیا ہے۔ حکومت اور انتظامیہ شہید پارٹی رہنماء کے قتل میں ملوث عناصر کی فوری گرفتاری کو یقینی بنائیں۔ پارٹی رہنماء کے قتل کیخلاف واشک میں ضلعی صدر انجینئر سیف الرحمن عیسی زئی، سابق ضلعی صدر میر بالاچ خان رودینی،ضلعی ڈپٹی سیکرٹری عبدالخالق بلوچ،محمد ایوب بلوچ، حافظ برکت عیسی زئی، محمد حسن بلوچ و عبدالرحمن سمالانی کی قیادت میں احتجاجی ریلی نکالی گئی اور مظاہرہ کیا گیا۔

بلوچستان کے ضلع چاغی میں پارٹی کے ضلعی دفتر سے نکالی جانیوالی ریلی شہید حمید بلوچ چوک پر جلسے کی شکل اختیار کرگئی جہاں شرکاء سے رکن قومی اسمبلی محمد ہاشم نوتیزی،ضلعی صدر کامریڈ منان آزاد جنرل سیکرٹری ثناء اللہ بلوچ، اقبال ریکی، محمد بخش بلوچ، شیر دل سمالانی، مصطفٰی کمال ریکی، کاظم مینگل،ممتاز مینگل اور دیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا۔

کہ گزشتہ ہفتے خضدار میں پارٹی کے مرکزی رہنما و بابو نوروز خان زرکزئی کے فرزند نواب امان اللہ خان زہری کے قافلے پر حملہ کرکے نواب امان اللہ زہری، انکے پوتے مردان خان زہری اور انکے ساتھیوں کو شہید کرنے کا مقصد کشت و خون کے بازار کو گرم کرنا ہے، حملہ میں ملوث عناصر نے گاڑیوں میں موجود خواتین کی عزت کو بھی بالائے طاق رکھ کر حملہ کیا جو کہ بلوچی روایت کے منافی ہے۔

انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت اپنی ذمہ داریوں کا احساس کرتے ہوئے شہید بابو نوروز خان زہری کے فرزند شہید نواب امان اللہ خان زہری میر مردان خان زہری اور انکے ساتھیوں کے قتل میں ملوث ملزمان کو گرفتار کرکے کیفر کردار تک پہنچائے۔

Source: Daily Balochistan Azadi

Share on :
Share

About Administrator

Check Also

آئی ایم ایف کا امدادی پروگرام کے مقررہ اہداف پر نظر ثانی نہ کرنے کا عندیہ

اسلام آباد —  بین الاقوامی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے پاکستان کے مالی سال …

Leave a Reply

'
Share
Share
Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com