Home / Archives / اسرائیلی شہریوں کو پہلی بار سعودی عرب کے بزنس دوروں کی اجازت
قدامت پسند خلیجی بادشاہت سعودی عرب کا قومی پرچم

اسرائیلی شہریوں کو پہلی بار سعودی عرب کے بزنس دوروں کی اجازت

اسرائیل نے پہلی بار اپنے شہریوں کو قدامت پسند خلیجی بادشاہت سعودی عرب کے کاروباری دوروں کی اجازت دینے کا فیصلہ کر لیا ہے۔ لیکن اسرائیل سعودی عرب کو ابھی تک باقاعدہ طور پر اپنی ’دشمن‘ ریاست بھی تصور کرتا ہے۔

تل ابیب سے اتوار چھبیس جنوری کو ملنے والی نیوز ایجنسی ڈی پی اے کی رپورٹوں کے مطابق اسرائیلی وزیر داخلہ آریے دیری نے آج ایک ایسے حکم نامے پر دستخط کر دیے، جس کے تحت اسرائیل کی کاروباری شخصیات آئندہ 90 روز تک سعودی عرب کے دورے کر سکیں گی۔

Israel Kabinett Minister Aryeh Deri (Ausschnitt)
اسرائیلی وزیر داخلہ آریے دیری

ان دوروں کی اجازت کاروباری مقاصد کے علاوہ سرمایہ کاری کے لیے سفر کی خاطر بھی دی جا سکے گی۔

تاہم ایسی کسی سرکاری اجازت کے حصول کے لیے یہ بھی لازمی ہو گا کہ سعودی عرب کے سفر کی خواہش مند کوئی بھی اسرائیلی شخصیت ملکی حکام کو کوئی ایسا باقاعدہ دعوت نامہ بھی پیش کرے، جو سعودی عرب سے بھیجا گیا ہو۔

وزیر داخلہ آریے دیری کے دفتر کے جاری کردہ ایک بیان کے مطابق اس دعوت نامے میں کسی بھی اسرائیلی بزنس مین یا سرمایہ کار کے لیے سعودی عرب میں اس کے آئندہ میزبان کی طرف سے یہ بھی لکھا ہونا چاہیے کہ میزبان نے اپنے ایسے کسی بھی اسرائیلی مہمان کی آمد اور اس کے لیے سعودی عرب میں انٹری ویزا سے متعلق تمام انتظامات کر لیے ہیں۔

Source: DW

Share on :
Share

About Administrator

Check Also

A Note for Baloch Missing Persons

Noroz Hayat Baloch It was a gloomy morning, and it snowed heavy last night, trees …

Leave a Reply

Share
Share
Social Media Auto Publish Powered By : XYZScripts.com